میلازما کو روکنے کے لیے لازما کریم کا استعمال کب تک کیا جائے؟

0

چہرے پر پھیلنے والے گہرےاور ہلکے بھورے دھبے جس کو میلازما کہا جاتا ہے، اس کے علاج کے لیے لازما کریم اپنی مثال آپ ہے۔ جلد کے ماہرین کے نزدیک میلازما کی بہت سے وجوہات ہیں، لیکن سورج کی روشنی کا اس کو زیادہ ذمے دار ٹھہرایا جاتا ہے، جس کی وجہ سے چہرے کے مختلف حصوں میں دھبے ظاہرہوتے ہیں۔ خواتین کی جلد نازک اور حساس ہوتی ہے اور وہ سورج کی سلگتی ہوئی دھوپ کی شدت کو برداشت نہیں کر پاتی جس کے نتیجے میں چہرے پر میلازما کا بسیرا ہوجاتا ہے۔

میلازما سے بچائو اور احتیاط میں سب سے اہم اور لازم چیز ہے، سن بلاک۔ جو سورج کی براہ راست شعاعوں کو چہرے کی جلد پر پڑنے سے روکنے کے لیے محافظ کر دار ادا کرتا ہے۔

مارکیٹس میں بہت سی اقسام کے سن بلاک موجود ہیں، مہنگی سے مہنگی کمپنز کے سن بلاک شامل ہیں، جو جلد کی حساسیت اور مناسبت کو مد نظر رکھ کر تیار کیے گئے ہیں۔

سن بلاک کے علاوہ میلازما سے بچائو کا بہترین طریقہ پانی کا زیادہ سے زیادہ پینا ہے، دن میں کم سے کم 8 سے 12 گلاس پانی پینا میلازما کو شکست دینے کے لیے بہت حد تک کافی ہوتاہے۔ ایسی خواتین جو میلازما کا شکار ہوچکی ہیں، ان کو چاہیے کہ سب سے پہلے کسی ماہر ڈاکٹر سے چہرے کے دھبوں کی تصدیق کرالیں کہ وہ میلازما ہی ہے یا کوئی اور بیماری۔

میلازما کی تصدیق ہوجانے کے بعد لازما کریم کا باقاعدہ استعمال کریں، اور اس بیماری سے ہمیشہ ہمیشہ کے لیے نجات حاصل کریں۔

لازما کریم سے 8 ہفتے میں میلازما کا خاتمہ :
(use lazma cream to treat melasma)

Lazma-Cream
Lazma-Cream

لازما کریم، میلازما سے نجات کے لیے جادوئی اثر رکھتی ہے۔
اس کی تیاری میں استعمال کیے جانے والے فارمولے جلد کو منفی اثرات سے محفوظ رکھتے ہیں۔
میلازما کے خاتمے کے لیے لازما کریم کو کم سے کم 8 ہفتے تک لگا تار استعمال کرنا چاہیے چہرے سے میلازما دور ہوجائے۔
دھبے زیادہ گہرے اور بھورے ہوں تو لازما کریم کے استعمال کے بارے میں اپنی فزیشن سے بھی مشورہ کیا جائے۔
میلازما کے دھبے زیادہ گہرے ہوں اور 8 ہفتے تک لازما کریم استعمال کرنے کے بعد فرق واضح محسوس ہو تو اس کا علاج جاری رکھیں اور کم سے کم 10 سے 12 مہینے یا پھر جب تک میلازما کے دھبے صاف نہیں ہوتے علاج جاری رکھیں۔

لازما کریم لگاتے ہوئے احتیاط :
(be careful while using lazma cream)

لازما کریم استعمال کرنے کے بعد کوشش کریں کہ گرمی میں نہ جائیں۔
چولہے کے قریب جانے سے گریز کریں، اور کم سے کم جب تک وہ اچھی طرح جلد میں جذب نہیں ہوجاتی ، اس احتیاط کو قائم رکھیں۔
چہرے کو گرد و غبار سے بھی بچائیں، اور کوشش کریں کہ رات کے وقت لازما کریم استعمال کریں، تاکہ گرمی سے جلد بہت حد تک محفوظ رہے۔
تما م تر احتیاط کے باوجود اگر چہرے پر خارش ، جلن، سوزش یا خشکی محسوس ہو تو فوری طور پر ڈاکٹر سے رجوع کریں۔