کان اور ناک کے چھید کا ٹی ٹری آئل سے علاج کریں

0

سادگی عورت کا زیور ہے اور زیور عورت کے حسن کو چار چاند لگاتا ہے۔ دنیا بھر میں کہیں بھی موجود خواتین اپنے سجنے اور سنورنے سے ہی اچھی لگتی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ دنیا کی تقریباً ہر عورت دنیا کو اچھی لگنے کے لیے ہر طرح کے فیشن کرتی ہے۔ خواتین کے کچھ فیشن ایسے ہوتے ہیں جو وقت کے ساتھ سامنے آتے ہیں کچھ عرصہ منظر پر رہتے ہیں اور پھر کچھ ہی دنوں میں سورج کی کرنوں کی طرح ڈوب جاتے ہیں۔ فیشن کی پھر ایک نئی صبح جلوہ گر ہوتی ہے اور حسن بکھرتی ہے۔

کچھ فیشن ایسے بھی ہیں جو زیب و زینت اور آرائش و زیبائش کے حوالے سے خواتین میں زمانہ قدیم سے چلے آرہے ہیں، جن میں زیورات کا استعمال خاص طور پر سونے کے زیورات جو اکثر خواتین کی کمزوری بھی ہوتا ہے۔ زیورات کے استعمال کے لیے خواتین کو جس تکلیف دہ عمل سے گزرنا پڑتا ہے وہ ہے ناک اور کان کا چھدوانا، جس میں وقتی طور پر تو تکلیف ہوتی ہے لیکن زیور اس میں سج کر شخصیت کو مزید نکھار دیتا ہے۔

ہمارے کلچر میں خواتین تو کیا کم عمر بچیوں کے بھی کان چھدوادیے جاتے ہیں اور ان کو کبھی نہ بند ہونے کے لیے ان میں بالی، ٹوپس، تنکا یا پھر تار ڈال دیا جاتا ہے،

کان اور ناک چھدوانے سے انفیکشن :(piercing infection)

کان اور ناک چھدوانے سے اکثر انفیکشن ہوجاتا ہے جو آگے چل کر کسی بڑےخطرے کی علامت بھی ثابت ہوتا ہے۔ اکثر خواتین اور بچوں کے کان کی رنگت سرخ پڑ جاتی ہے، اس پر سوجن محسوس ہوتی ہے اور ہاتھ لگانے پر تکلیف بھی محسوس ہوتی ہے جس سے کان چھدوانے والے کو ایک کرب سے گزرنا پڑتا ہے۔
کبھی کبھی کان چھدوانے سے اس میں پس پڑ جاتی ہے اور زخم بننے لگتا ہے، کبھی خون بھی جاری ہوجاتا ہے جس سے ایک جگہ سے دوسرے جگہ انفیکشن کے ہونے کا امکان ہوتا ہے۔
ایسی صورت حال میں ڈاکٹر سے فوری طور پر رجو ع کریں اور ڈاکٹر کی تجویز کردہ ادویات کا استعمال کریں اور کان کو انفیکشن سے بچائیں۔

ٹی ٹری آئل سے چھید کا علاج:(treat your piercings with tea tree oil)

٭ ٹی ٹری آئل زخموں کو مندمل کرنے کی بھرپور صلاحیت رکھتا ہے، اگر کان یا ناک میں چھدوانے کے بعد سوراخ میں کوئی زخم ہوگیا ہے تو اس میں ٹی ٹری آئل لگائیں کچھ ہی دنوں میں زخم سے نجات حاصل ہوجائے گی۔
٭ ٹی ٹری آئل اور کوکونٹ آئل کو اگر ملا کر زخموں پر اور خاص طور پر چھدے ہوئے کان یا ناک پر ہوجانے والے انفیکشن میں استعمال کیا جائے تو افاقہ یقینی ہوتا ہے۔
٭ ٹی ٹری آئل بہترین اینٹی سیپٹک ہے اور زخم کو ٹھیک کرنے میں جادوئی اثر رکھتا ہے۔
٭ جلد پر ہونے والے زخموں میں خارش بہت ستاتی ہے، کھجانے سے تکلیف بھی ہوتی ہے اور خون کے رسنے کا خطرہ بھی ہوتا ہے ایسے میں ٹی ٹری آئل اور پیپرمنٹ آئل کو کم مقدار میں ملا کر لگانے سے خارش میں سکون ملتا ہے۔

کان اور ناک چھدوانے کے بعد احتیاط:(becareful while piercings)

کان چھدوانے میں اکثر غیر معیاری دھات استعمال کی جاتی ہے۔ ایسی سوئی جس میں زنگ بھی ہوتا ہے ، اس سے بچنا چاہیے۔ بہت زیادہ تکلیف محسوس ہونے کی صورت میں کان میں چھدوانے کے بعد ڈالے جانے والی بالی، تنکا، تار اور ٹوپس فوری طور پر اتار دیں۔ زخم ہوجانے کی صورت میں پانی سے اس کو بچائیں خاص طور پر نہاتے ہوئے احتیاط رکھیں، اس کے علاوہ اگر کھارے پانی سے نہانا ہو تو کانوں پر شاپر لپیٹ لیں تاکہ کانوں کے زخموں میں تکلیف محسوس نہ ہو۔