کیا آپ جانتے ہیں کہ شکر ایکنی کا باعث بنتی ہے؟

0

میٹھا کسے اچھا نہیں لگتا ۔ کچھ نمکین کھانے کے بعد میٹھا کھانے کا بھی دل چاہتا ہے لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ ایکنی (acne) ہونے کی ایک بڑی وجہ شکر کا ذیادہ استعمال ہے۔ تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ ایکنی کی دو اہم وجوہات ہیں ایک ہارمونز اور دوسری (sebum) سوزش۔ ہارمونز جلد کے غدود کو ذیادہ سیبم (sebum) اور خلیات بنانے پر اکساتے ہیں ۔ سیبم اور مردہ خلیات مل کر جلد کے مساموں کو بند کردیتے ہیں ۔ ان بند مساموں میں ہونے والی سوزش سیبم  (sebum) کو نقصان پہنچاتی ہے اور بیکٹیریا کو افزائش کا موقع دیتی ہے۔ لیکن تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ ایکنی کی وجہ بیکٹیریا نہیں بلکہ سیبم (sebum) میں ہونے والی سوزش ہوتی ہے۔ اور اس کی اہم وجہ شکر کا ذیادہ استعمال ہوتا ہے۔

شکر ہارمونز سے ہونے والی ایکنی (acne) کا باعث بنتی ہے:

تقریباـــ تمام ایکنی کا تعلق ہارمونز سے ہوتا ہے۔ کیونکہ ایکنی والی جلد ایک ہارمون اینڈروجن سے متاثر ہوتی ہے جو سیبم اور خلیات کی پیداوار میں اضافہ کرتی ہیں ۔
انسولین بنانے والے ہارمونز بھی ایکنی کا باعث بنتے ہیں۔ تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ یہ ہارمونز جتنے ذیادہ بڑھتے ہیں ایکنی کی شدت کو اتنا ہی بڑھا تے جاتے ہیں۔ سیبم کی پیداوار میں اضافہ کرتے ہیں اور مساموں کو بڑا کرتے ہیں۔

ایکنی (acne) کا شکر سے تعلق:

انسولین اور آئی جی ایف کا جسم میں شوگر لیول سے گہراتعلق ہوتا ہے ۔ جب آپ کاربوہائڈریٹ خاص طور پر شکر کھاتے ہیں تو جسم میں شوگر لیول بڑھ جاتا ہے۔ اس شکر کو سیلز تک پہنچانے اور شکر کا لیول نارمل کرنے کے لئے جسم ذیادہ انسولین بنانا شروع کر دیتا ہے۔
اگرآپ میٹھی چیزیں کم مقدار میں وقفے وقفے سے کھائیں تو ذیادہ مسئلے کا باعث نہیں ہوگا۔ لیکن اصل مسئلہ اس وقت ہے جب آپ میٹھی چیزیں ذیادہ مقدار میں تھوڑے تھوڑے وقفے سے کھائیں ۔
یہ سمجھنے کے لئے سب سے آسان بات یہ ہے کہ جتنی مرتبہ آپ کوئی میٹھا کھائیں گے آپ کے چہرے پر سیبم کی پیداوار میں اتنا ہی اضافہ ہو گا اور ایکنی کے امکانات بڑھتے جائیں گے۔

شکر سوزش کو بڑھاتی ہے:

ایکنی کی دوسری اہم وجہ سوزش ہے۔ تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ ایکنی کے مریضوں کے جسم میں صحت مند لوگوں کے مقابلے میں سوزش ذیادہ ہوتی ہے۔ شکر جسم کے اینٹی اوکسی ڈنٹس کو کم کرتی ہے جس کی وجہ سے سوزش بڑھ جاتی ہے اور ایکنی کا باعث بنتی ہے۔ سوزش میں اضافے کی وجہ کسی چیز کے کھانے سے الرجی یا پیٹ کے مسائل بھی ہو سکتے ہیں اس کے علاوہ کچھ غذائیں بھی ایکنی میں اضافہ کرتی ہیں ۔
شکر سوزش کو بہت ذیادہ بڑھاتی ہے ۔ اس کے لئے ایک تحقیق کی گئی جس میں ۲۹ صحت مند نوجوانوں کو شامل کیا گیا ۔اس تحقیق کے دوران انھیں روزانہ ۲ کین سوڈا ڈرنک کے ۳ ہفتے تک پلائے گئے جس کے نتیجے میں ان کے جسم میں کری ایکٹو پروٹینز بڑھ گئے جو کہ جسم میں سوزش کو ناپنے کا ذریعہ بنتے ہیں ۔
ایک کین روزانہ پینے سے جسم میں سوزش کی مقدار ۸۷ فیصد تک بڑھی جبکہ دو کین روز پینے سے سوزش ۱۰۵ فیصد تک بڑھ گئی۔ اکثر دیکھا جاتا ہے کہ روزانہ ایک سے دو کین پی لینا لوگوں کے لئے عام بات ہوتی ہے۔

(candida) کینڈیڈا:

شکر کینڈیڈا کے ذریعے سے بھی چہرے پر ایکنی بڑھانے کا باعث بنتی ہے ۔ کینڈیڈا ایک طرح کا ایسٹ ہے جو جلد اور نظام ہضم میں موجود ہوتا ہے۔عام طور پر یہ نقصان دہ نہیں ہوتا لیکن کچھ صورتوں میں جبکہ شکر یا اینٹی بائیوٹکس کا استعمال بہت ذیادہ ہو تو ان کی افزائش حد سے ذیادہ بڑھ جاتی ہے۔ جب ایسا نظام ہضم میں ہوتا ہے تو پیٹ کے مسائل بڑھ جاتے ہیں اور ایکنی کا باعث بنتے ہیں ۔ اگر کینڈیڈا کی افزائش جلد میں ہو تو اس سے سوزش بڑھ جاتی ہے اور ایکنی کا باعث بنتی ہے۔
خلاصہ یہ ہے کہ زائد شکر کا استعمال ایکنی کی وجہ بننے والے دو اہم عوامل ہارمونز اور سوزش میں اضافہ کرتا ہے۔ اس کا یہ مطلب نہیں کہ آپ شکر کا استعمال بالکل ختم کردیں بلکہ سوڈا ڈرنک یا میٹھی چیزوں کا استعمال کم مقدار میں کبھی کبھی لیں اس طرح جلد مین سیبم کی مقدار میں تیزی سے اضافہ نہیں ہوگا۔
اگر آپ واقعی ایکنی سے پریشان ہیں تو اپنی غذا میں میٹھے اور سوڈا ڈرنک کا استعمال کم سے کم کریں اس طرح آپ جلد ہی ایکنی سے نجات پالیں گے۔