نیم اور تلسی کا رس چہرے کے نشان دو ر بھگائے

0

داغ دھبوں سے پاک چہرہ ہر کسی کی توجہ کا مرکز بن جاتا ہے، چہرے کی جلد اتنی حساس ہوتی ہے کہ اس پر موسم کے اثر ات کے علاوہ دوائوں اور غذائوں کے منفی اثرات بھی اکثر ظاہر ہونے لگتے ہیں۔ وہ خواتین جو صاف رنگت اور خوبصورت نقش و نگار کی مالک ہیں، جو بھی ان کو دیکھے وہ ان ہی کا ہو جاتا ہے لیکن اگر ایسی خواتین کے چہرے پر دانے یا دانوں کے نشان ہوں تو ساری حسن کافور ہو کر رہ جاتا ہے۔

جس طرح خواتین اپنے چہرے کی جلد کی حفاظت (skin care) میں زمین آسمان ایک کردیتی ہیں ، اسی طرح اگر ان کوجلد کے حوالے سے کسی پریشانی کا سامنا ہو تو یہ بھی ان کے لیے ناقابل برداشت لمحہ ہوتا ہے۔

جلد کی بیماریوں کے لیے جدید ادویات کی اہمیت اپنی جگہ لیکن جڑی بوٹیوں سے جلد کا علاج ہر دور میں اہمیت کا حامل رہا ہے۔ نیم کے پتوں اور تلسی کے پتوں کا رس (neem and tulsi juice) جلد کی اور بہت سی بیماریوں کے علاوہ چہرے پر دانوں کے نشان کے خاتمے کا بھی بہترین حل ہے۔

طبی ماہرین اور حکیم اس بات پر سو فیصد متفق ہیں کہ جلد کے داغ دھبوں (skin scar) کو مٹانے کے لیے تلسی اور نیم کے پتوں کے رس کا کوئی نعم البدل نہیں ہے۔

یہی وجہ ہے کہ اس دور کی جدید میک اپ پروڈکٹس اور جلد کے امراض کے لیے تیار کی جانے والی ادویات میں تلسی اور نیم کے پتوں کا رس بھی شامل کیا جاتا ہے جس سے بہتر نتائج سامنے آتے ہیں۔

نیم کے پتوں کے رس سے چہرے کے نشان کا علاج

٭ اس کے پتوں سے نکالا گیا رس کئی طرح کے جلدی امراض کو دور کرسکتا ہے کیونکہ اس میں بیکٹیریا کے خلاف لڑنے والے اجزا پائے جاتے ہیں۔ اسی وجہ سے نیم کو جلد کا ٹونر بھی کہاجاتا ہے۔
٭ نیم کے پتوں کا رس جلد کی بے شمار بیماریوں کا علاج ہے۔اس میں بیکٹریا سے لڑنے والے اجزا پائے جاتے ہیں۔جلد کی صفائی کی بات ہو تو نیم کا رس ایک بہترین ٹونر سمجھا جاتا ہے۔
٭ جلدی مسائل کے حل اور خوبصورتی میں اضافے کے لیے نیم کےپتوں کا رس حیرت انگیز طور پر جلد کو صاف کرتا ہے۔
٭ نیم کے پانی کو چہرے کی جلد پر لگانے سے جلد جھریوں محفوظ رہتی رہے۔
٭ نیم کے پتوں کو ابال کر اس سے چہرہ اور ہاتھ دھونے سے چہرے کے نشان غائب ہوجاتے ہیں اور ہاتھوں کی بھی صفائی ہوجاتی ہے۔
٭ نیم کے پتوں کا رس روئی میں بھگو کر چہرے پر دانوں کے رہ جانے والے نشان پر کچھ دیر کے لیے رکھ کر چھوڑ دیں ، نشان غائب ہوجائیں گے۔
٭ نیم کے پتوں کا رس مالٹے کے پسے ہوئے چھلکوں میں ملا کر لگانے سے چہرے کے نشان صاف ہوجاتے ہیں۔

تلسی کے پتوں کے رس سے چہرے کے نشان کا علاج

٭ تلسی کے پتوں کے رس میں پوٹاشیم، ، تانبا، اور میگنیشیم کی طرح معدنیات کی ایک اچھی مقدار پائی جاتی ہے۔
٭ جو جلد پر پڑنے والے نشان اور داغ دھبوں کو صاف کرنے کی طاقت رکھتی ہے۔
٭ اگر آپ کے چہرے پر دانوں یا کسی اور چیز کے نشان ہیں اور آپ اس سے چھٹکارہ حاصل کرنا چاہتے ہیں تو تلسی کے پتوں کے رس میں لیموں کا رس شامل کر کے اچھی طرح ملا لیں، اور پھر اس محلول کو چہرے کے نشانوں پر لگائیں ، کچھ ہی دنوں کے استعمال سے چہرے کے داغ دھبے اور نشان غائب ہوجائیں گے۔
٭ جلد پر دانوں کے بعدرہ جانے والے نشان پر اگر خارش محسوس ہو تو تلسی کا رس ملنے سے افاقہ ہوتا ہے۔
٭ چہرے کے داغ اور نشان دور بھگانے کے لیے تلسی کا رس کرشماتی اثر دکھاتا ہے۔
٭ تلسی کا رس، کھیرا اور ٹماٹر متاثرہ جگہ پر ملنے سے نشان صاف ہونے کے ساتھ ساتھ جلد نرم و ملائم بھی ہوجاتی ہے۔