کیل مہاسوں سے فوری طور پر کیسے چھٹکارا حاصل کریں

0

کیل مہاسے نوجوانی کا ایسا تحفہ ہیں جو اندرونی نظا م کے باعث جلد پر نمودار ہوتے ہیں، اکثر لڑکے اور لڑکیاں اس سے بہت حد تک پریشان ہوجاتی ہیں۔انھیں یہ خوف ستانے لگتا ہے کہ جیسے اب یہ کبھی ان کا ساتھ نہیں چھوڑیں گے، اور اگر ساتھ چھوڑ بھی دیں گے تو اپنے نشانات چہرے کو دے کر جائیں گے۔

چہرے پر کیل مہاسوں کے ظاہر ہونے کی مختلف وجوہات ہوتی ہیں۔ جس میں پہلی وجہ تو چکنائی ہے، جلد چکنی ہونے کی وجہ سے یہ ظاہر ہوتے ہیں۔ اور دوسری وجہ ہے دیکھ بھال میں غفلت۔ غیر معیاری، مرغن اور چکنائی سے بھرے ہوئے کھانے خوراک کا حصہ بنتے ہیں تو جلد پر دانے نمودار ہوتے ہیں جو بعد میں کیل مہاسوں کی صورت اختیار کرلیتے ہیں۔

کیل مہاسوں سے نجات کا سب سے بہتر طریقہ کلینزنگ ہے۔ اس سے جلد صاف اور چمک دار ہوجاتی ہے۔ لیکن کچھ لوگ اس سے گریز کرتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ ان کے مہاسوں کا اتنی جلدی علاج ہوجائے کہ دیکھنے والے حیرت میں پڑ جائیں۔ کیل مہاسوں سے چھٹکارہ حاصل کرنے کے لیے کچھ گھریلو نسخے بتائے جا رہے ہیں جن پر عمل کر کے چہرے سے مہاسوں کو ٹاٹا بائے بائے کہا جاسکتا ہے۔

مہاسوں کا فوری علاج

٭ لہسن میں اینٹی بیکٹیریل، اینٹی فنگل، اینٹی وائرل اور جراثیم سے صاف ( اینٹی سیپٹک) خصوصیات پائی جاتی ہیں جس کی مدد سے چہرے پر پڑے کیل مہاسے دور کیے جا سکتے ہیں۔

٭ لہسن اپنی تیزابیت کو ختم کرنے والی خوبی کی وجہ سے درد اور تیزابیت کو دورکرتا ہے جب کہ اسے جلد پر پڑنے والے داغوں کو صاف کرنے کے لیے بھی استعمال کیا جاتا ہے۔

٭ لیموں میں وٹامن سی پایا جاتا ہے جو جلد کی تازگی اور دانوں کو ختم کرنے میں بہت اہم ہے، کیل مہاسوں پر اگر لیموں کے رس کے چند قطرے لگائے جائیں تو وہ فوری طور پر غائب ہوجاتے ہیں۔

٭ پیاز میں ایک ایسا مادہ ہوتا ہے، جو چہرے پر نکلنے والے دانوں کے خلاف موثر ثابت ہوتا ہے۔کچے پیاز کھانے سے کیل مہاسے بہت حد تک ختم ہوجاتے ہیں۔

٭ شہد کا ماسک کیل مہاسوں کا دشمن ہے، شہد کے ماسک میں اگر دارچینی اور دودھ بھی ملا لیا جائے تو اثر جلد ہوتا ہے۔

٭ ملتانی مٹی جلد پر خاص طور پر چہرے پر نکلنے والے دانوں اور مہاسوں کو دور کرنے کے لیے بہت اہم ہے، رات کو ملتانی مٹی کسی برتن میں بھگو کر رکھ دیں، صبح اس کو چہرے پر کچھ دیر کے لیے لگائیں اور پھر نیم گرم پانی سے صاف کرلیں۔

٭ ٹوتھ پیسٹ میں ٹرائی کلوسان اور ہائیڈروجن پرآکسائیڈ نامی مادّوں کی موجودگی اسے دانوں اور کیل مہاسوں کےلیے بہترین علاج بنادیتی ہے۔ ٹوٹھ پیسٹ کو 2 گھنٹے کے لیے مہاسوں پر لگا چھوڑ دیں اس کے بعد نتیجہ خود سامنے ہوگا۔

٭ مہاسوں کو دور کرنے کے لیے مسور کی دال کا ابٹن گائے کے دودھ میں ملا کر چہرے پر لگانے سے مہاسے اڑن چھو ہوجاتے ہیں۔

٭ سنگترے کے چھلکوں کو دھوپ میں اچھی طرح خشک کر کے اس میں تھوڑا سا دودھ ملا کر پیسٹ بنالیں اور پھر چہرے پر جہاں دانے یا مہاسے ہوں اس جگہ لگا کر کچھ دیر چھوڑ دیں، دانے اور مہاسے بہت جلد غائب ہوجائیں گے۔

٭ کیل مہاسے ختم کرنے کے لیے مولی کا پانی چہرے پر لگانے سے بہترین نتائج سامنے آتے ہیں۔

٭ بادام کو پیس کر اس میں تھوڑا سا دودھ شامل کرلیں اور تیار کیا گیا لیپ چہرے پر لگائیں ، مہاسے ختم ہوجائیں گے۔