چار پھل ایکنی کا حل

0

چہرے کی خوبصورتی کو قائم کررکھنے اور چہرے کے داغ ، دھبوں، دانوں، ایکنی سے نجات حاصل کرنے کے لیے جڑی بوٹیوں، پھل، اور غذائیں بڑی اہمیت رکھتی ہیں۔ جسم کا اندرونی نظام جتنا مضبوط ہوگا جلد پر اس کے اتنے ہی اچھے اثرات دکھائی دیں گے۔

ایسی خواتین جو اپنے چہرے پر نکلنے والی ایکنی سے پریشان رہتی ہیں، ان کو چاہیے کہ پریشانی میں مبتلا رہنے کی بجائے اگر وہ تازہ پھل سے ایکنی کا حل تلاش کرلیں تو کیا برا ہے۔ پھلوں میں وہ قدراتی اجزا موجود ہوتے ہیں جو جلد کو فائدہ پہنچاتے ہیں۔

وہ خواتین جو ایکنی سے نجات حاصل کرنا چاہتی ہیں ان کو چاہیے کہ درج ذیل چار پھلوں کا استعمال شروع کردیں اور پھر اپنے چہرے کو ایکنی سے صاف ہوتا ہوا خود دیکھ لیں اور پھر اس بات کا خود یقین کرلیں کہ یہ چار پھل ایکنی کا حل کس طرح ثابت ہوسکتے ہیں۔

سیب

سیب توانائی کا وہ خزانہ ہے جس کی ہماری جلد کو بہت ضرورت ہوتی ہے۔ اس میں موجود اجزاءجلد کے مردہ خلیات اور بیکٹیریا کو دور کرکے جلد نکھارنے کی صلاحیت رکھتے ہیں، یہ دیکھنے میں جتنا سرخ ہوتا ہے ،اپنے اندر خون کو صاف کرنے کی صلاحیت بھی اتنی ہی رکھتا ہے۔ روزانہ سیب کھانے سے جلد پر بہتر اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

سیب کا ماسک

سیب کو کدوکش کر کے اس میں شہد ڈال کر اچھی طرح مکس کر لیں۔ اب اس پیسٹ کو 20 منٹ کے لیے چہرے پر لگائیں۔ 20 منٹ کے بعد نیم گرم پانی سے منہ دھولیں۔ اس بات کو ذہن میں رکھیں کہ یہ ماسک خشک نہیں ہو گا لہٰذا اسے زیادہ دیر تک چہرے پرلگائے رکھنے کی ضرورت نہیں ہے اس قدرتی ماسک کا استعمال چہرے کو تروتازہ رکھنے کے ساتھ ساتھ ایکنی کے لیے بھی نہایت مفید ہے۔

ناریل

ناریل کی چھال، اس کا پانی، اس کا گودا ، اس کا تیل یہاں تک کہ اس کی لکڑی بھی خوبیوں اور اہمیت کی حامل ہے۔ ناریل کے پانی میں پروٹین اور وٹامن بی کمپاؤنڈٖ موجود ہوتا ہے ۔ انسانی جلد کے لیے ناریل بے شمار خوبیوں سے بھرا ہوا ہے۔ناریل کا استعمال چہرے پر ظاہر ہونے والی ایکنی کے خاتمے کے لیے موثر ہے۔

ناریل کا ماسک

ناریل کا پاوٴڈر 1کھانے کا چمچ۔ گلیسرین 2 کھانے کے چمچ۔ پودینے کے پتے 5 عدد۔ تل 1 چائے کا چمچ۔ لونگ کا تیل آدھا چائے کا چمچ لے لیں۔ پھر تل اور پودینے کے پتوں کو اچھی طرح پیس لیں۔ اب کسی برتن میں ناریل پاوٴڈر، گلیسرین اور لونگ کا تیل ڈال کر اچھی طرح مکس کر لیں اور اس میں پسے ہوئے تل اور پودینے کے پتے شامل کر کے ایک بار پھر ان کو مکس کرک ے یکجان کر لیں کہ یہ پیسٹ کی شکل اختیار کر لیں پیسٹ کو ماسک کے طور پر دس دنوں کے لیے تیس تیس منٹوں کے لیے چہرے پرلگائیں۔ تیس منٹ کے بعد چہرے کو تازے پانی سے دھولیں۔ ایکنی کے لیے بے حد مفید ماسک ہے اس سے چہرے پر موجود پس والے دانے بھی ختم ہو جاتے ہیں۔

جامن

جامن موسم بہار کا آئرن سے بھرپور پھل ہے جو خون کی صفائی میں موثر ثابت ہوتا ہے، بہترین ذائقے سے ہٹ کر یہ پھل متعدد طبی فوائد کا حامل ہے۔ جامن آئلی جلد کو تروتازہ، ہموار اور کیل مہاسوں سے پاک رکھنے میں مدد دیتا ہے۔ ایکنی کے خاتمے کے لیے روزانہ رات کو جامن کی گھٹلی پیس کر دودھ میں ملا کر لگانے سے ایکنی ختم ہوجاتی ہے۔ جامن میں کیلشیم ، آئرن، فولک ایسڈ، فیٹ ، پروٹین اور پانی موجود ہوتے ہیں، جو صحت کے لیے بہت مفید ہیں۔

جامن کا ماسک

جامن اور آم کی گٹھلیوں کو سکھا کر پاؤڈر بنالیں اور محفوظ کرلیں، حسب ضرورت اسے پانی یا عرق گلاب میں مکس کر کے متاثرہ حصے پر لگائیں۔ چند دنوں میں ہی نمایاں فرق نظر آئے گا۔کوشش کریں کہ یہ ماسک شام یا رات کے وقت لگائیں دن کی روشنی میں لگانے سے گریز کریں۔اس کے لگانے سے چہرے کی ایکنی غائب ہوجائے گی۔

انناس

انناس وٹامنز اور منرلز سے بھر پور انوکھا پھل ہے ۔ انناس میں وٹامن سی وافر مقدار میں موجود ہے اس کے علاوہ وٹامن بی سکس ، فولیٹ ، تھایامین ،رائبوفلیون ، اور نیاسن شامل ہے۔انناس کارس پینے سے سب سے زیادہ فائدہ جلد کو پہنچتا ہے۔ جس کی وجہ اس میں وٹامن سی کی موجودگی ہے۔ وٹامن سی حساس جلد ، جلد کی سوزش اور ایکنی میں بہت مفید ہے ۔
انناس کا ایک ٹکڑالیں اور اسے کسی کپڑے کے ذریعے متاثرہ جگہ پرلگائیں اور ایک گھنٹے تک لگا رہنے دیں۔ انناس میں ایسی خاصیت موجود ہے کہ یہ جلد سے ایکنی کو صاف کرنے کے ساتھ ساتھ جلد کے دیگر نشانوں کو بھی صاف کردیتا ہے۔
انناس کارس پینے سے سب سے زیادہ فائدہ جلد کو پہنچتا ہے۔ جس کی وجہ اس میں وٹامن سی کی موجودگی ہے۔ وٹامن سی چکنی جلد اور ایکنی میں بہت مفید ہے ۔