سن بلاک۔ دوست روپ کا، دشمن دھوپ کا

0

جلد کی سب سے بڑی دشمن دھوپ ہوتی ہے۔ موسم تبدیل ہوتا رہتا ہے لیکن سورج کی تپتی اور سلگتی ہوئی شعاعیں جب انسانی جلد پر اور خاص طور پر چہرے پر براہ راست پڑتی ہیں تو جلد کو بہت نقصان پہنچاتی ہیں۔ جلد کا رنگ تبدیل کر دیتی ہیں، اس پر ایسے اثرات مرتب کرتی ہیں چہرے کی ساری دلکشی جھلس کر رہی جاتی ہے۔

خواتین کے لیے یہ بات کسی پریشانی سے کم نہیں ہوتی کہ ان کا چہرہ جس کی حفاظت وہ میک ا پ کی مہنگی ترین مصنوعات استعمال کر کے کرتی ہیں اس چہرے پر کوئی معمولی سا داغ بھی ظاہر ہوجائے تو ان کی راتوں کی نیندیں اڑ جاتی ہیں۔کیوں کہ چہرہ ہی تو سب سے پہلے انسان کو متاثر کرتا ہے، گفتگو اور اخلاق توبہت دیر میں سامنے آتے ہیں۔

آخر سورج کی وہ کون سی شعاعیں ہیں جو انسانی جلد کو متاثر کرتی ہیں اور ایسی صورت میں کیا کیا احتیاطی تدابیر اختیار کرنی چاہئیں، یہ جاننا بھی بہت ضروری ہے، سورج کی روشنی سے جلد کو بچانے کے کچھ طریقے بتائے جا رہے ہیں جن پر عمل کیا جائے تو جلد کی دلکشی اور تازگی کو برقرار رکھا جا سکتا ہے۔

تیز دھوپ اور اس کی تپش سے بچنے کے لیے سن بلاک سے بہتر طریقہ کوئی نہیں، یہ جلد کے لیے بہت ضروری ہے جس سے میں موجود نقصان دہ شعاعیں جسے عموماً الٹرا وائلٹ اے اور الٹرا وائلٹ بی کے نام سے جانتے ہیں، یہ انسانی جلد پر داغ ، سیاہ دھبوں اور جھریوں کا سبب بنتی ہیں۔

خواتین کو چاہیے کہ جب بھی تیز دھوپ میں گھر سے باہر نکلیں تو سن بلاک ضرور استعمال کریں۔ اس کے علاوہ پکنک منانے کے لیے ساحل سمندر پر جانے والوں کو چاہیے کہ وہ سن بلاک ضرور استعمال کریں تاکہ سورج کی سلگتی ہوئی شعاعوں سے جلد محفوظ رہ سکے ۔ سن بلاک سے جلد کی رنگت صاف ہونے کے ساتھ ساتھ جلد کے ڈھلتی عمر کے اثرات بھی ختم ہوجاتے ہیں۔

سن پروٹیکٹنگ فیکٹر  (SPF) کیا ہے؟

کسی بھی سن اسکرین پر SPFلکھا ہوتا ہے جس کا مطلب ہے ، سن پروٹیکٹنگ فیکٹر، یہ آپ کو بتاتا ہے کہ آپ کتنی دیر تک دھوپ میں وقت گزار سکتے ہیں۔اگر اس پر لکھا ہے کہ SPF 30تو اس کا مطلب یہ ہے کہ آپ سن بلاک لگا کر تیز دھوپ سے کم سے کم 30 منٹ تک خود کو محفوظ رکھ سکتے ہیں۔اگر SPF 60 لکھا ہے توا س کا مطلب ہے کہ آپ سن بلاک لگا کر تیز دھوپ میں 60 منٹ یعنی ایک گھنٹے تک وقت گزار سکتے ہیں۔اس کا فائدہ یہ ہوتا ہے کہ اگر آپ دھوپ میں ایک گھنٹے سے زیادہ وقت گزارنا چاہتے ہیں تو60 منٹ یعنی ایک گھنٹے کے بعد اپنے چہرے پر سن بلاک دوبارہ لگا لیں، اس سے زیادہ وقت گزارنا ہے تو پھر 60 منٹ مکمل ہونے کے بعد تیسری بار لگا لیں، یعنی جتنا SPFہوگا جلد کی اتنی ہی دیر تک دھوپ سے حفاظت رہے گی۔

الٹرا وائلٹ اے اور بی شعاعیں

یہ دھوپ کی ایسی شعاعیں ہوتی ہیں جو براہ راست جلد پر اثر انداز ہوتی ہیں، تیز دھوپ میں جلد کے جھلسنے کا خطرہ ہوتا ہے، سیاہ دھبے جلد پر نمودار ہوتے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ چہرے پر جھریاں بھی وقت سے پہلے ظاہر ہونا شروع ہوجاتی ہیں، یہ شعاعیں جلد کے لیے اس حد تک خطرناک ہوتی ہیں کہ ان سے جلد کے کینسر کا بھی خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

الٹرا وائلٹ شعاعوں سے بچائو

سن بلاک خریدتے وقت اس بات کا خاص خیال رکھیں کہ اس پر کیا لکھا ہوا ہے، اگر اس پر براڈ سپکٹرم لکھا ہے یا پھر اس پر پلس کا نشان بنا ہوا ہے تو اس کا مطلب ہے کہ یہ سن بلاک الٹرا وائلٹ اے اور الٹرا وائلٹ بی دونوں مضر شعاعوں سے آپ کے چہرے کی جلد کی حفاظت کرے گا۔
کچھ میک اپ کی مصنوعات میں بھی SPFشامل ہوتا ہے جس سے الٹرا وائلٹ شعاعوں سے جلد کو بچایا جا سکتا ہے لیکن یہ اس وقت فائدہ مند ہوتا ہے جب آپ کو 10 سے15 منٹ تک دھوپ میں رہنا ہو اگر اس سے زیادہ دھوپ میں وقت گزرانا ہے تو پھر باقاعدہ سن بلاک استعمال کرنا ہوگا تاکہ جلد کی حفاظت بھرپور انداز میں ہوسکے۔

سن بلاک کیسے لگایا جائے

٭ چہرے اور گردن پر لگانے کے لیے سن بلاک کی مقدار ایک کھانے کے چمچ کے برابر ہو نی چاہیے۔سن بلاک کا اثر کم سے کم 3 گھنٹے تک قائم رہتاہے ، اگر اس سے زیادہ وقت دھوپ میں گزارنا ہو تو ہر تین گھنٹے کے بعد دوبارہ لگائیں۔

٭ ہاتھوں پر لگانے کے لیے کوئی خاص سن بلاک نہیں ہے، وہ سن بلاک جو آپ چہرے پر لگاتے ہیں اسی کو ہاتھوں پر بھی لگانا چاہیے۔

٭ دھوپ سے ہونٹ بھی اپنی تازگی کھو بیٹھتے ہیں جس سے شخصیت کا نکھار ماند پڑ جاتا ہے۔اس کے لیے ہونٹوں پر ایسی لپ بام لگائیں جس میں SPF 30 موجود ہو۔

٭ دھوپ سے بچنے کے لیے سن بلاک پائوں کے اوپری حصے پر لگائیں تاکہ پیروں کی جلد بھی دھوپ کی تپش سے محفوظ رہے۔