سگریٹ نوشی جلد کو سیاہ کردیتی ہے

0
سگریٹ نوشی ایک ایسی عادت ہے جس میں دنیا بھر کے بے شمار لوگ مبتلا ہیں۔ نوجوان نسل سے بڑے بوڑھے سبھی سگریٹ نوشی کی اس عادت میں مبتلا دکھائی دیتے ہیں۔ اس کے بے شمار نقصانات ہیں اور فائدہ کوئی ا یک بھی نہیں ، اس کے باوجود سگریٹ نوشی کی عادت میں لوگ خاص طور پر نوجوان اپنی صحت اور اپنا پیسا ضائع کرنے میں مصروف ہیں۔ مردوں کے ساتھ ساتھ آج کل خواتین میں بھی سگریٹ نوشی کا رجحان بڑھتا جار ہا ہے خاص طور پر وہ نوجوان لڑکیاں جو ابھی تعلیم حاصل کر رہی ہیں ، سگریٹ نوشی کی عادت نے انھیں بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔  طبی ماہرین کی جدید تحقیق نے یہ بات ثابت کردی ہے کہ پھیپھڑوں کے کینسر کے علاوہ مزید 13 کینسر ایسے ہیں جن کا بنیادی سبب سگریٹ نوشی ہے۔ سگریٹ میں ایسے کیمیکل بھی شامل کیے جا رہےہیں جس سے کینسر کا خطرہ یقینی ہوتا جا رہا ہے۔ ایک اور ریسرچ کے مطابق ایک سگریٹ انسان کی زندگی سے 14 منٹ ختم کردیتی ہے۔ سگریٹ میں نکوٹین اور کاربن مونو آکسائڈجلد کے لیے نقصان دہ ثابت ہوتی ہے ۔ ایسی خواتین جو اپنی صحت اور اپنی جلد کی صحت برقرار رکھنا چاہتی ہیں انھیں چاہیے کہ پہلی فرصت میں سگریٹ نوشی ترک کردیں، کیوں کہ ہونٹوں کی رنگت کے ساتھ ساتھ سگریٹ کا یہ ظالم دھواں چہرے کی جلد کو بھی سیاہ دھبوں کا بدنما تحفہ دے جاتا ہے۔ 
سگریٹ نوشی کے جلد پر اثرات (effects of smokin on skin)
 
نشے کے عادی افراد بدن پر خارش، چہرے پر جھریاں اور جلد کی خشکی جیسی بیماریوں میں مبتلا ہوجاتے ہیں۔
 
تمباکو نوشی جلد کو وقت سے پہلے بوڑھا کردیتی ہے۔
 
تمباکو نوشی سے جلد مردہ اور بے جان سی ہوجاتی ہے جو ایک نقصان دہ عمل ہے۔
 
سگریٹ کا دھواں جلد کو مزید سیاہ کردیتا ہے جو بدنما دکھائی دیتا ہے۔
 
تمباکو کی خوشبو سانسوں کو اور اس سے اٹھنے والا دھواں چہرے پر جھریوں کا سبب بنتا ہے۔
 
تمباکو نوشی سے جلد میں سختی پیدا ہوجاتی ہے اور جلد کی نرمی آہستہ آہستہ ختم ہونے لگتی ہے۔
 
ایسی خواتین جو سگریٹ نوشی کرتی ہیں انھیں جلد کے حوالے سے بہت سے مسائل کا سامنا رہتا ہے۔
 
سگریٹ نوشی سے ہونٹوں کی جلد سیاہ پڑ جاتی ہے ، جو بدنما دکھائی دیتی ہے۔