مہینے میں صرف ایک بار فیشل کروائیں

0

فیشل دراصل اندرونی طور پر جلد کی صفائی (skin cleansing) کا نام ہے، جلد کے اندر جمی میل اور گرد وغبار باہر نکالنے کا بہترین اور موثر ذریعہ فیشل ہے۔ یہی وجہ ہے کہ فیشل کو میک اپ کا بنیادی حصہ بھی کہا جاتاہے۔ کوئی دلہن ہو یا عام شخصیت اگر اس کا میک اپ آپ کو اچھا لگ رہا ہے تو اس کا یہ مطلب ہر گز نہیں ہے کہ اس میں بیوٹیشن کا کمال ہے بلکہ اس کا مطلب یہ ہے کہ اس کا فیشل اچھا ہوا ہے تبھی میک اپ (make up) نکھر کے سامنے آیا ہے۔

کچھ لوگوں کا خیال ہے کہ فیشل سے جلد خراب ہوجاتی ہے ، ایسا بالکل نہیں ہے، ہم جہاں سانس لیتے ہیں ہمارے اطراف گرد و غبار، دھواں اور دھوپ ہماری جلد کو بے رنگ کرنے کے علاوہ اندر سے کمزور اور میلا کردیتی ہے۔ فیشل سے جلد کی رنگت صاف، چہرہ شاداب اور تروتازہ ہوجاتا ہے، اس کے علاوہ جلد چمک دار ہوجاتی ہے اور جلد میں تنائو (skin tightening) بھی پیدا ہوتا ہے، وقت سے پہلے بڑھاپے کے آثار بھی کم ہوجاتے ہیں۔

فیشل کی بہت سی اقسام ہیں ، جو جلد کی نوعیت کے لحاظ سے ہیں، چکنی، خشک، کھردری، نارمل اور درمیانی جلد کے لیے فیشل ان کی مناسبت سے کیا جاتاہے۔

مہینے میں ایک بار فیشل ضروری ہے :
(facial is necessary in mon month)

٭ ویسے تو جلد اور ماحول کے مطابق ہی فیشل کرانا ضروری ہوتا ہے۔
٭ آپ جہاں رہتی ہیں یا اگر آپ کا گھر سے باہر جانا زیادہ ہوتا ہے اور آپ کی جلد کو فضائی آلودگی، گرد و غبار، دھواں اور مٹی کے باریک ذرات متاثر کرتے ہیں تو آپ اپنی بیوٹیشن کے مشورے کے مطابق فیشل لیں۔
٭ اس بات کا فیصلہ آپ کی بیوٹیشن کریں گی کہ آپ کو ہفتے میں ایک بار فیشل لینا ہے یا مہینے میں ایک بار۔
٭ دنیا بھر کی ماہر بیوٹیشنز کے مطابق خواتین کو مہینے میں ایک مرتبہ فیشل ضرور لینا چاہیے۔
٭ اسی طرح اگر آپ کی جلد زیادہ چکنی ہے ، آلودگی اس پر زیادہ اثر انداز ہوتی ہے تو مہینے میں دو سے تین مرتبہ بھی فیشل لیا جاسکتا ہے۔
٭ اگر آپ کے چہرے پر دانے ہیں، یا ایکنی نکلی ہوئی ہے تو فیشل لینے سے قبل اپنی بیوٹیشن کی رائے ضرور جان لیں، اس کے بعد فیشل لیں۔
٭ بیوٹیشن اور جلد کے ماہرین ہی آپ کی جلد کے بارے میں بتا سکتے ہیں کہ آپ کی جلد کے حوالے سے کون سا فیشل آپ کے لیے مفید رہے گا۔

فیشل کے دوران احتیاط : 

٭ کوشش کریں اگر آپ بیوٹی پارلر جا کر فیشل لیتی ہیں ، تو ایسے پارلر کا انتخاب کریں جہاں ماہر بیوٹیشن اپنی خدمات انجام دے رہی ہوں۔
٭ اس پارلر میں معیاری اور اچھی میک اپ پروڈکٹ استعمال کی جاتی ہوں۔
٭ آپ کی جلد حساس ہے تو بہت دھیان رکھیں، جو فیشل آپ لے رہی ہیں کہیں وہ آپ کی جلد کے لیے آگے چل کر نقصان دہ تو نہیں ہے۔
٭ عام حالت میں جلد کو 3 یا 4 ہفتے کے بعد فیشل کی ضرورت پڑتی ہے جس میں کلیزنگ اور ایکسفولیشن بھی شامل ہے۔
٭ فیشل کے دوران بیوٹیشن کے کا مشورہ نظر انداز ہر گز نہ کریں، کیوں کہ وہ آپ کی جلد کو آپ سے بہتر جانتی ہیں، اور آپ کے لیے وہی طریقہ اختیار کرتی ہیں جو آپ کی جلد کے لیے موزوں ہو۔
٭ فیشل کے دوران کوشش کریں گفتگو کم سے کم کریں، کیوں کہ منہ بار بار کھلنے سے جلد میں کھنچائو پیدا ہوتا ہے، اور فیشل کے بعد جلد چمک دار تو ہوجاتی ہے لیکن کچھ دنوں کے بعد اس پر لکیریں ظاہر ہونا شروع ہوجاتی ہیں۔
٭ وقت سے پہلے بڑھاپے سے بچنا ہے تو فیشل مہینے میں ایک بار ضرور لیں، تاکہ جلد میں تنائو پیدا ہونے کے ساتھ ساتھ جلد حسین اور خوبصورت دکھائی دے، یاد رکھنے کی بات یہ ہے کہ آپ حسن آپ کو بوڑھا ہونے سے بچاتا ہے۔