جسم عمر کے ساتھ کولیجن بنانا کم کردیتا ہے

0

انسان جیسے جیسے عمر کی منزلیں طے کرتا ہے اس کی جلد، ہڈیوں اور صحت پر اس کے اثرات ظاہر ہونا شروع ہوجاتے ہیں۔ بچپن سے جوانی اور پھر بڑھاپے تک زندگی کے اس سفر میں انسانی صحت کے حوالے سے بہت سی تبدیلیاں واقع ہوتی رہتی ہیں۔

انسانی جسم اور انسانی جلد کو بے شمار قدرتی اجزا کی ضرورت ہوتی ہے، جو ہمیں غذا ، پھل، خشک میوہ جات اور دیگر ذرائع سے حاصل ہوتے ہیں ، وٹامنز ، کیلشیم، اس کے علاوہ اور بہت سے اجزا جسم کو توانا بنانے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔

انھی تمام اجزا، وٹامنز اور پروٹینز میں کولیجن بھی انسانی جلد اور صحت کے لیے ضروری اور اہم ہے۔جیسے جیسے عمر بڑھتی ہے انسان کے جسم میں کولیجن بننے کی رفتار بھی کم ہوتی چلی جاتی ہے۔ کولیجن کے مقدار کی کمی بڑھاپے کے آثار نمایاں کرتی ہے۔

اگر آپ بڑھاپے میں صحت اور جلد کے حوالے سے تن درست نظر آنا چاہتی ہیں تو آپ کو کولیجن کے بارے میں آگاہی اور کولیجن حاصل کرنے کے ذرائع کے بارے میں بھی علم ہونا ضروری ہے، تاکہ اس کی اہمیت اور اس کا حصول آپ کے بڑھاپے کو پرکشش بنا دے۔

کولیجن کیا ہے

کولیجن انسانی جسم میں پروٹین میں سے ایک ہے جو جلد کو صحت مند بناتا ہے۔ یہ ہڈیوں، جلد اور پٹھوں کے حوالے سے بہت اہم ہے، خون اور دانت سمیت دیگر جسم کے حصوں میں کولیجن پایا جاتا ہے۔یہ انسانی جسم میں عمر کے ساتھ ساتھ بننا کم ہوتا چلا جاتا ہے ۔

کولیجن کے فوائد  : (benefits of collagen)

٭ یہ جلد کو مضبوط اور لچک داربنا تا ہے۔

٭ جھریوں کو کنٹرول کرتا ہے ۔

٭ جسم کے اعضا کو آپس میں جوڑتا ہے۔یہی وجہ ہے کہ اس کو جسم کو جوڑنے والا گلو بھی کہا جاتا ہے۔

٭ اس کی کمی جلد، ہڈیوں اور جوڑوں کے متعدد امراض کا سبب بنتی ہے۔

کولیجن حاصل کرنے کے ذرائع : (source of collagen)

اس بات پر طبی ماہرین متفق نظر آتے ہیں کہ اخذ کردہ کولیجن کے فوائدعارضی ہوتے ہیں، تاہم مستقل اور زیادہ نتیجہ خیز فوائد حاصل کرنے کے لیے ضروری ہے کہ قدرتی طریقے سے جسم کے اندر موجود کولیجن کی کمی دور کی جائے اور اس کا ذریعہ کھانے پینے کی قدرتی اشیا جن میں ایسے اجزا بکثرت پائے جاتے ہیں جو کولجین کے بننے میں مدد دیتے ہیں۔

٭ کشمش میں کولیجن بھاری مقدار میں پایا جاتا ہے ، جس سے جلد لچک دار ہونے کے ساتھ ڈھیلی پڑنے سے رک جاتی ہے۔

٭ سویا اور اس پر مشتمل مصنوعات ، زیتون ،پالک،کھیرا،گوبھی ، چقندر، ٹماٹر، گاجراور گہرے سبز اور سرخ رنگ والی دیگر
سبزیوں اور پھلوں سے بھی وافر مقدار میں کولیجن حاصل کیا جاسکتا ہے۔

٭ خشک میوہ جات میں بادام، کاجو، اخروٹ، لوبیا اور مونگ پھلی کولیجن حاصل کرنے کا بہترین ذریعہ ہیں۔

٭ پھلوں میں ترش پھل جیسے مالٹا، اسٹرابری اور لیموں یہ وہ پھل ہیں جن سے کولیجن حاصل کیا جاسکتا ہے۔

٭ اس کے علاوہ دودھ، گوشت، مچھلی اور انڈے بھی کولیجن حاصل کرنے کے بہترین ذرائع ہیں۔