سردیوں میں عناب کے تیل کے فوائد

0

جو جوبا آئل جسے عناب کا تیل  کہا جاتا ہے، سرد موسم میں جلد کے لیے سب سے زیادہ فائدہ مند ہے، جن کی جلد خشک ہوتی ہے اور موسم سرما میں مزید خشک ہوجاتی ہے ان کے لیے عناب کا تیل بھرپور مددگار ثابت ہوتا ہے۔ جلد کی خشکی کے جہاں اور بہت سے نقصانات ہیں وہیں جلد پر ایسی گہری لکیریں پڑنے کے بھی امکانا ت ہوتے ہیں جو وقت کے ساتھ ساتھ گہری بھی ہوسکتی ہیں اور زخم کی صورت بھی اختیار کرسکتی ہیں۔

خشک جلد اندر سے نمی کی کمی کے باعث چہرے بیرونی طور پر ظاہر ہوتی ہے، اور اس نمی کی کمی کی بے شمار وجوہات اب تک سامنے آچکی ہیں جن خاص طور پر خواتین کا دن بھر میں پانی کا کم پینا بھی شامل ہے۔ پانی کی کمی سے جلد اندر سے خشک ہونے لگتی ہے اور پھر اس کے اثرات باہر کی طرف ظاہر ہوتے ہیں، جلد روکھی اور بے رونق ہوجاتی ہےاور اس پر خشک دھبے اور نشان ظاہر ہوتے ہیں جو شخصیت کو متاثر کرتے ہیں۔

سردیوں میں خواتین کو سب سے زیادہ جس مسئلے کا سامنا ہوتا ہے وہ ہے جلد کا خشک ہونا۔ اس مسئلے سے جان چھڑانے کے لیے وہ بے شمار حل تلاش کرتی ہیں اور کبھی کبھی تومزید مسائل میں الجھ کر رہ جاتی ہیں۔ موسم کی مناسبت سے تیار کردہ بے شمار کریمز، لوشنز، جیل اور آئل ایسے ہیں جو واقعی جلد کو اندر سے نمی فراہم کر کے بیرونی طور پر جلد کو نرم و ملائم اور چکنا بنا دیتے ہیں۔

انھی میں جوجوبا آئل یعنی عناب کا تیل بھی قابل ذکر ہے، جلد کی حفاظت (skin care) اور خاص طور پر سرد موسم میں جلد کی حفاظت کے لیے حیرت انگیز خوبیاں اپنے اندر رکھتا ہے۔

عناب کا تیل : (jojoba oil)

عناب بیر کی طرح چھوٹا اور سرخ پھل ہے جسے زمانہ قدیم سے حسن و آرائش کے لیے استعمال کیاجارہا ہے، طب کی دنیا میں عناب کے بے شمار فوائد سامنے آچکے ہیں۔جدید تحقیق میں بھی عناب کو جلد کی نمی اور خوبصورتی کے حوالے سے اہم قرار دیا جاچکا ہے۔یہی وجہ ہے کہ عناب کے تیل کو مہنگی ترین میک اپ پروڈکٹ میں استعمال کیا جاتا ہے ۔

موسم سرما میں عناب کے تیل کا استعمال : (use and benefits of jojoba oil )

٭ عناب کا تیل عناب کے بیجوں سے نکالا جاتا ہے، اس عمل میں دنوں نہیں بلکہ ہفتوں درکار ہوتے ہیں۔
٭ عناب کے تیل کو رات کو سونے سے قبل اچھی طرح چہرے اور ہاتھوں پر لگانے سے جلد خشک ہونے سے بچ جاتی ہے۔
٭ عناب کے تیل کے استعمال سے نہ صرف جلد خشکی سے پاک ہوجاتی ہے بلکہ کیل مہاسے بھی ختم ہوجاتے ہیں۔
٭ عناب کا تیل جلد میں جذب ہونے کی صلاحیت رکھتا ہے جس سے جلد اندرونی طور پر نمی حاصل کرتی ہے اور جلد کے باہر خشکی کے اثرات نہ ہونے کے برابر دکھائی دیتے ہیں۔
٭ عناب کے تیل میں وہ قدرتی اجزا پائے جاتے ہیں جو جلد کو نمی فراہم کرنے کے علاوہ جلد کو صاف اور شفاف بناتے ہیں۔
٭ عناب کے تیل کی یہ خاصیت بھی ہے کہ جہاں یہ جلد کو موئسچرائزر بناتا ہے وہیں بہت زیادہ آئلی جلد کو کنٹرول کرنے کی بھی صلاحیت رکھتا ہے۔
٭ بہت زیادہ چکنائی کی وجہ سے جلد پر نکلنے والے ایکنی کو بھی عناب کے تیل سے کنٹرول کیا جاسکتا ہے۔
٭ عناب کے تیل کو سر میں لگانے سے سر کی خشکی بھی دور ہوتی ہے اور بال گھنے اور نرم و ملائم ہوجاتے ہیں۔
٭ عناب کے تیل کے چند قطرے اگر رات کو سونے سے قبل ہونٹوں پر لگا لیے جائیں تو ہونٹ خشک ہونے سے بچ جاتے ہیں اور ان کی سرخی بھی برقرار رہتی ہے۔
٭ عناب کا تیل رات کو سونے سے قبل پھٹی ہوئی ایڑھیوں پر لگانے سے ایڑھی کے زخم اور لکیریں صاف ہوجاتی ہیں۔