سردیوں کے لئے آسان گھریلو ایکسرسائزز ٹپس

0

سردیوں میں فٹ رہنا بے حد مشکل مرحلہ ہے چونکہ ان دنوں میں کمبل اوڑھ کر ڈرائی فروٹ کھاتے ہوئے اچھی کتاب پڑھنے کا ذیادہ موڈ ہو تا ہے۔ لیکن اب خراب موسم یا سرد موسم کے بہانے چھوڑیں اوران مندرجہ ذیل ایکسر سائزز ٹپس سے اس موسم میں بھی گرم اور محفوظ رہیں۔ برائن کیلکن جو کہ سرٹیفائیڈ ٹرینر ہیں ان کا کہنا ہے کہ ’’سردیوں میں ایکسر سائز کرنے کا سب سے بڑا مرحلہ ہماری تجربے کی کمی اور اس کے متعلق غیر یقینی ہے ۔‘‘ آگے ان کا کہنا یہ ہے کہ ’’کچھ ورک آئوٹس کے بعد آپ اعتماد بحال کر لیتے ہیں ‘‘۔

٭۱۔ اپنے معمولات کو ترتیب دیں:۔

اپنے روز مرہ معمولات میں ورک آئوٹ کو شامل کرنے کے لئے اسے اپنا مقصد بنانا ضروری ہے۔آپ کے مقاصد بہت مناسب اور مخصوص ہو نے چاہیے،کیونکہ اگر آپ کے مقاصد گول مول یا مبہم ہو ں گے تو ان کو پورا کرنے میں آپ کو سستی آئے گی۔ اپنے ساتھ ورک آئوٹ کرنے کے لئے ایک ساتھی چن لیں تا کہ آپ کو اس سے تقویت ملتی رہے ۔اور آپ اپنے کام کو جاری رکھ سکیں ۔

٭۲۔ گرم اور خشک کپڑے پہنیں:۔

جسم کی گرمائش کو کم کرنے کا سب سے تیز طریقہ گیلا ہونا ہے۔ کیونکہ گرمی کو کم کرنے کا سب سے موثر طریقہ پانی ہے۔ بد قسمتی سے سردیوں کی ایکسر سائز آپ کے جسم کو پسینہ آنے کی صورت میں گیلا کر دیتی ہے۔ سردی کے ورک آئوٹ کا اصل مصرف آپ کو خشک رکھنے کے ساتھ ساتھ گرم رکھنا بھی ہے ۔’’آپ کا جسم آپ کے ٹمپریچر کو معتدل رکھنے کے لئے بہترین کام کرتاہے ، اگر آپ باہر کے ٹمپریچر کے حساب سے مکمل اورصحیح لباس میں ہوں۔‘‘کیلکن کا یہ کہنا ہے۔کپڑوں کا درست انتخاب آپ کو خشک اور آرام دہ رکھتا ہے۔

٭۳۔ کاٹن عام استعمال کے لئے درست ،لیکن ایکسر سائز کے لئے غلط:۔

ہمارے روزمرہ کے استعمال کے کاٹن کے کپڑے ہمارے سونے جاگنے کے لئے تو صحیح ہیں لیکن ورک آئوٹ کے لئے درست نہیں ہیں۔ کیونکہ اس کے لئے لچکدار کپڑے کا ہو نا زیادہ درست ہے تاکہ آپ بآسانی حرکت کر سکیں۔ دوسرے کاٹن آپ کا پسینہ جذب کرنے کی صلاحیت رکھتاہے،اس لئے ورک آؤٹ کے لئے ایسے کپڑے استعمال کرنے سے گریز کریں کیونکہ یہ آپ کے جسم کی حرارت کو ختم کر دیتا ہے اورایک ناپسندیدہ ٹھنڈک آپ میں منتقل کردیتا ہے۔ اس کے بجائے مصنوعی فائبر جیسے کہ پولئسٹر یا نائلون کے کپڑے زیادہ بہتر انتخاب ہے۔

٭۴۔اپنی جلد کی حفاظت کریں:۔

سردیوں کا مطلب ہے خشک ہو ا جو کہ ہماری جلد کے لئے سب سے نقصان دہ ثابت ہو تے ہیں ۔ اسی لئے گھر کے اندر اور باہر اپنے آپ کو ہائیڈریٹ رکھنا بہت ضروری ہے۔
۔ بہت زیادہ پانی کا استعمال کریں
۔ نہانے کے بعد موئسچرائزنگ کریم یا لوشن کا استعمال ضرور کریں
۔ اور ورک آئوٹ کے درمیان اور بعد میں سن اسکرین ضرور لگائیں ۔
اگر آپ کسی باہر یا پہاڑی علاقے میں ہیں اور ور ک آئوٹ کا ارادہ رکھتے ہیں تو جلد کے جھلسنے کا رسک بہت زیادہ ہوتا ہے اور برف چونکہ سورج کی روشنی کو منعکس کرتی ہے تو اسی لئے اپنا چہرہ ناک کان اور ہونٹوں کو جھلسنے سے بچانے کے لئے کم از کم ۳۰ ایس پی ایف کے سن اسکرین کا استعمال ضروری ہے۔ اور آنکھوں کی حفاظت سن گلاسز سے کریں۔

٭۵۔ بہت زیادہ کپڑے نہ چڑھائیں:۔

ورک آئوٹ کرنے کے لئے بہت زیادہ آرام دہ یا گرم کپڑوں کی ضرورت نہیں ہوتی کیونکہ ایکسر سائز خود آپ کے اندر گرمائش منتقل کرنے کا کام سر انجام دیتی ہے۔ زیادہ کپڑوں سے آپ کو جلد گرمی محسوس ہونے لگے گی،آپ پسینے میں شرابور ہو جائیں گے اور ایکسر سائز پوری ہونے سے پہلے ہی تھک جائیں گے ۔زیادہ پسینہ بہنے کی وجہ سے ڈی ہائیڈ ریشن کا خطرہ بھی پیدا ہو جاتا ہے۔گیلوے کہتے ہیں’’کپڑوں کے انتخاب میں سب سے بڑی غلطی بہت زیادہ کپڑے پہننا ہے۔‘‘

٭۶۔ اپنے کھلے ہوئے اعضاء کی حفاظت :۔

ورک آئوٹ کے وقت اپنے کھلے ہوئے اعضاء جیسے کہ انگلیاں ،پیر ،ناک ،کان وغیرہ کی حفاظت کیجیے۔ کیونکہ یہ سردی سے سب سے زیادہ متاثر ہوتی ہیں۔ کیو نکہ دورانِ خون آپ کے ان اعضاء میں کم منتقل ہوتا ہے ،اس لئے ہاتھوں کی حفاظت کے لئے گلوز کا استعمال کیجیے۔ نمی کو جذب کرنے والے موزے ،(اونی یا مصنوعی نہ کہ کاٹن)آپ کے پائوں کو آرام دہ اور خشک رکھنے میں مددگار ثابت ہو ں گے۔ان سب کے علاوہ اپنے سر کی حفاظت نا بھول جائیے ۔کیونکہ سرحدت یا گرمائش کو قید کرنے میں سب سے زیادہ مدد دیتا ہے۔

  کچھ بہترین گھریلو ایکسر سائزز : (home workout)

٭رسی کودنا:۔

رسی کودنا صرف بچوں کا کام نہیں ہے بلکہ گھریلو ورک آئوٹ کا اہم جزو ہے۔ گھریلو ورک آئوٹ میں ا س کا جواب نہیں رسی کودنے میں چند منٹ میں ہی آپ کی سانس بے قابو ہو جاتی ہے اور آپ کے پٹھے ،پنڈلیاں پھٹنے لگتی ہیں ،یہ دل والوں کے لئے بھی عمدہ ایکسر سائز ہے۔

٭ سیڑھیاں اترنا چڑھنا:۔

یہ خواتین کے لئے بہت اچھی ایکسر سائز ہے ،اگر آپ کے گھر میں سیڑھیاں نہیں ہیں تو بھی ّپ اس کو کر سکتے ہیں اس کے لئے آپ کو صرف یہ کرنا ہے کہ ایک کرسی لیں اور اس پر اوپر نیچے کرتے رہیں ۔آپ کا یہ ورک آئوٹ رسی کودنے کے برابر تو نہیں لیکن اپنے جسم کو چاق و چوبند رکھنے کا اچھا ذریعہ ہے۔

٭رقص کرنا:۔

جب آپ روز مرہ کے ورک آئوٹ سے بور ہو جائیں تو ہفتے میں ایک دفعہ اپنا پسندیدہ گانا لگا کر اس پر بھرپور رقص کریں۔یہ آپ کی کیلو ریز جلانے کا بہت عمدہ طریقہ ہے اور دل کے لئے بھی اچھا ہے۔ مزا اپنی جگہ ورک آئوٹ اپنی جگہ۔ اگر آپ گھر میں اکیلے ورک آئوٹ کر رہے ہیں تو اپنی مرضی سے جو دل چاہے اسٹیپ کریں کوئی روک ٹوک نہیں ہے۔

٭ صفائی :۔

صفائی بہت زیادہ جسمانی ہو سکتی ہے اگر آپ ویکیوم کریں اور پونچھا لگائیں ۔ سردیوں میں ورک آئوٹ کرنا جتنا مشکل ثابت ہوتا ہے اس حساب سے یہ ایکسر سائز گھر کی صفائی کے ساتھ آپ کے جسم کے جوڑوں ،پٹھوں کے لئے بھی بہت عمدہ ہے۔

٭پانی کی بوتلوں کا وزن اٹھانا:۔

اگر آپ کندھوں ،بازئوں کی ورزش کرنا چاہتے ہیں تو آپ پانی کی بوتلوں سے اپنے وزن بنا سکتے ہیں ۔اگر آپ کو یہ بہت آسان لگتی ہے تو آپ بڑے چیلنج کے لئے وقت کے ساتھ ساتھ بوتلوں کا وزن بڑھا تے جائیں۔ان کو ڈمبلز کی طرح اٹھا ئیں ۔اور اپنے پٹھے مضبوط کریں۔

٭گھٹنوں کو تیزی سے حرکت دینا:۔

اگر آپ کو بھاگنے میں مزا آتا ہے لیکن سردیوں کی وجہ سے اس میں سستی آتی ہے تو اس کے لئے گھر میں گھٹنو ں کی تیزی سے حرکت اور ایک ہی جگہ کھڑے ہو کر تیزی سے بھاگنے والی پوزیشن میں گھٹنوں کو حرکت دینا بھاگنے کا نعم البدل ثابت ہو سکتا ہے۔