جلد کی صحت (skin health) آپ کی اندرونی صحت کو ظاہر کرتی ہے، اسکن فینیٹی

0

جلد ہمارے جسم کا سب سے بڑا حصہ ہے یہی وجہ ہے کہ جسم میں ہونے والی کوئی خرابی جلد پر اپنے اثرات ظاہر کردیتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ جلد پر رونماء ہونے والی کوئی تبدیلی کسی خرابی کا باعث بھی ہوسکتی ہے۔ جلد کے کچھ مسائل ذیل میں درج کئے جارہے ہیں جن کے ظاہرہونے پر ڈاکٹر کو دکھانا ضروری ہوتا ہے۔

 رنگت خراب ہونا:

اگر بغیر کسی وجہ کے جلد کی رنگت تبدیل ہو جائے تو یہ صورت کسی بڑے مسئلے کو ظاہر کرسکتی ہے ۔ اگر جلد کی رنگت گھٹنوں، کہنیوں، جوڑوں اور جلد کے بلوں پر سے گہری ہو جائے تو یہ ہارمونزکی خرابی کو ظاہر کرتی ہے۔اگر آپ شوگر کے مریض ہیں تو جلد کی پیلی رنگت جگر کی خرابی کو ظاہر کرتی ہے جب کہ اگر جلد سنولا گئی ہے تو اس کا مطلب ہے کہ جسم میں آئرن جذب ہونے میں مسئلہ ہو رہا ہے۔

ایکنی:

بڑی عمر میں ایکنی کا پھوٹ پڑنا ہارمونز کی تبدیلی یا غیر متوازن ہونے کی علامت ہے۔ اس کا تعلق ذہنی دبائو یا خواتین کی ماہواری سے بھی ہو سکتا ہے۔ اس طرح کی ایکنی دوائوں کے ذریعے یا خود ہی ختم ہو جاتی ہیں۔ لیکن اگر ایکنی کے ساتھ ماہواری میں بھی بے قاعدگی ہو اور یہ دوائوں سے ٹھیک نہ ہوں تو ڈاکٹر سے رجوع کریں کیونکہ بڑوں کی ایکنی پی ۔سی۔ اوز۔ کی علامتوں میں سے ایک علامت ہے ۔

ریشز:

ریشز ہونا عام بات ہے جو اکثر الرجی کی وجہ سے ہوتے ہیں لیکن دو طرح کے ریشزتشویش کا باعث ہوسکتے ہیں ۔ اگر جلد کے بلوں یا گردن کے پچھلے حصے میں پرپل کلر کا ریش ظاہر ہو تو یہ ذیابیطس کی دوسری قسم کی نشاندہی کرتا ہے۔ اگر آپ پرپل کلر کا ریش ٹانگوں کے نچلے حصے پرپھیلتا ہوا دیکھیں تو یہ ہیپیٹائیٹس سی کی علامتوں میں سے ایک علامت ہو سکتی ہے۔ اگر آپ ان میں سے کوئی سا بھی ریش جسم پر دیکھیں تو ڈاکٹر سے فوری طور پر رجوع کریں۔

بٹر فلائی ریش:

ایک اور خاص قسم کا ریش جسے آپ نظر انداز نہیں کر سکتے ۔ یہ چہرے پرنمودار ہوتا ہے اور ناک کے دونوں طر ف آنکھوں کے نیچے گالوں پر پھیل جاتا ہے۔ یہ جلد کی بیماری روزیشی بھی ہو سکتی ہے لیکن یہ دق(لیوپس) کی علامتوں میں سے بھی ایک علامت ہے۔ جس کے جراثیم جلد کے ذریعے جسم میں داخل ہوتے ہیں۔

سوریاسس(چنبل):

یہ لال رنگ کے ابھرے ہوئے دھبے یا دھاپڑ ہوتے ہیں جن پرسے جلد سلور کلر کے چھلکے دارہو جاتی ہے یہ جسم پر کہیں بھی ابھر سکتے ہیں۔ ایسا جب ہوتا ہے جب جسم آپ کی ضرورت سے ذیادہ سیلز بنانا شروع کر دیتا ہے۔ اگر آپ کو جلد پر ایسے نشان نظر آئیں تو ڈاکٹر سے رابطہ کرنا چاہئیے۔ کیونکہ سوریاسس ہائی بلڈ پریشر،ذیابیطس کی دوسری قسم اوردل کے امراض کے امکانات کو بڑھا سکتا ہے۔

ایکزیما:

سرخ ،خشک اور خارش زدہ جلد ایکزیما سے متاثر ہوتی ہے ۔ اس میں جلد موٹی،سوزش زدہ اور تہوں والی بن جاتی ہے۔ایکزیما غیر متوازن ہارمونز یاتھائرائڈز کی وجہ سے بھی ہو سکتا ہے۔

جھائیاں:

تل یا جھائیاں ہوجانا عام بات ہے اس سے کسی طرح کی بھی جلد متاثر ہو سکتی ہے۔ اگر یہ آپ کی جلد پرپہلے سے موجود ہیں تو فکر کی بات نہیں لیکن اگر یہ اچانک ظاہر ہونا شروع ہوئے ہیں یا پرانے والون نے اپنی جگہ تبدیل کرنا شروع کی ہے تو یہ میلانوما کی علامت ہو سکتی ہے لہٰذا ضروری ہے کہ اس کے لئے کسی ماہر جلد سے رابطہ کیا جائے۔