اپنی شادی کے لئے بہترین تیاری کس طرح کی جائے؟

0

ہمارے معاشرے میں شادی ایک بہت اہم موقع ہے ،یہ کسی بھی لڑکی کی زندگی کا سب سے اہم دن ہوتا ہے جس کا انتظاراور خواب وہ بچپن سے دیکھتی ہے ۔ بچپن میں گڈے گڑیا کی شادی، پھر اپنی سکھی سہیلیوں کی شادی، پھر اپنے گھر میں بھائی بہنوں کی شادیاں، اس کے دل میں ارمانوں کی ایک دنیا بسا دیتی ہیں ۔

ہر لڑکی کی یہ خواہش ہوتی ہے کہ اس کی شادی کسی شہزادے سے ہو،یا کم از کم شہزادیوں کی طرح اس کو رخصت کیا جائے۔اسی طرح ماں باپ بھی بیٹی پیدا ہوتے ہی اس کے لئے جہیز کی چیزیں جمع کرنا شروع کر دیتے ہیں یا کم ازکم اس کے لئے پیسے جمع کرنا شروع کر دیتے ہیں اور ان کی خواہش ہوتی ہے کہ ان کی بیٹی عزت سے رخصت ہو اور اس کی شادی میں کوئی کمی نہ رہ جائے۔

یہاں ہم آپ کی آسانی کے لئے 6 سے 8 ماہ پہلے سے کیا شادی کی تیاری کی جائے اس کے کچھ نکات پیش کر رہے ہیں تا کہ اچانک اور ہڑبونگ والی کیفیت سے بچا جا سکے۔ ویسے تو کچھ شادیاں ایک دم سے ہی طے پا جاتی ہیں ،تو اس میں تو سب کچھ ہی ایمر جنسی میں کرنا پڑ جاتا ہے لیکن اگر آپ کی شادی پہلے سے طے شدہ ہے اور اس میں ٹائم ہے تو اس کو اچھی طرح پلا ننگ کے ساتھ سر انجام دیں کہ لوگ اس کی ترتیب اور حسن کو مدتوں یاد رکھیں۔

٭شادی سے 4 سے 6 ماہ پہلے:۔

۔ اپنی شادی کے انتظاامات میں سب سے پہلے اس بات کا جائزہ لیں کہ آپ کا بجٹ اور گنجائش کیا ہے۔
۔ اس کے بعد لان، بنکوئیٹ یا ہال کی بکنگ کروالیں ،تاکہ آخر میں جگہ ڈھونڈنا مسئلہ نہ ہو،اور من پسند جگہ مل جائے ۔
۔ تقریبات کا اندازہ کرلیں کہ کتنی تقریبات کرنی ہیں اور کونسی گھر میں اور کونسی ہال میں ہونی ہیں۔
۔ اپنی تقریبات کے لحاط سے جوڑوں (کپڑوں) کا انتخاب کریں کہ کس تقریب میں کیا پہننا ہے۔
۔ کپڑوں پر کام وغیرہ بننے کو دینا ہے تو دے دیں ،تاکہ پھر ان کی سلائی کا کام ہو سکے۔
۔ جہیز کی فہرست تیار کریں کہ کیا کیا چیز جہیز میں لینی ہے۔ اس کے حساب سے اپنا مہینے کا بجٹ بنائیں تاکہ ہر مہینے کچھ نہ کچھ چیزیں لی جاتی رہیں۔
۔ بہت زیادہ کپڑے لے جانے سے گریز کریں کیونکہ وقت کے ساتھ فیشن تبدیل ہوتا ہے اور پرانے فیشن کے کپڑے پہننا آپ بھی پسند نہیں کریں گی۔
۔ شادی میں کتنے لوگوں کو بلانا ہے ان کی فہرست تیار کرنا شروع کریں ۔
۔ اس اہم موقع کی تصاویر کے لئے کسی اچھے فوٹو گرافی کو بھی نظر میں رکھیں اور اس کی بکنگ بھی کروالیں۔
۔ موسم کو مدنظر رکھتے ہوئے مینو اور لوکیشن کا انتخاب کریں۔
۔ ہال یا بینکوئٹ کی ڈیکوریشن کے بارے میں معلومات لے لیں اس میں کوئی تبدیلی کروانی ہے تو وہ بھی ہال والوں کو پہلے سے بتا دیں۔

٭شادی سے 2 سے 3 ماہ پہلے:۔

۔اپنے شادی کے دن کے کپڑوں،جیولری،جوتے،اور دوسری ضروری اشیاء کو فائنل کرلیں۔
۔اپنے فوٹو گرافر یا وڈیو میکر کو کنفرم کردیں۔
۔اپنے بیوٹی سیلون کی بکنگ کروالیں اوراس کے میک اپ اور ہئیر اسٹائلسٹ سے مل لیں اور وہ جو ضروری ہدایات دیں ان کو نوٹ کر لیں ۔
۔اپنے بالوں اور جلد کا خاص خیال رکھیں۔کسی ہر بلسٹ یا بیوٹیشن سے ضروری ٹپس لے لیں اور اس پر عمل کریں تاکہ شادی والے دن آپ کا حسن مکمل نظر آئے۔
۔اپنی ڈائٹ کا پلان بنائیں تاکہ وزن کنٹرول میں رہے۔ کسی اچھے نیوٹریشنسٹ سے ڈائٹ پلان بنوا لیں۔
۔ پھلوں اور جوسز کا زیادہ استعمال کریں تاکہ وزن کے ساتھ ساتھ آپ کی جلد بھی خوبصورت ہو جائے۔
۔ شادی کے کارڈ منتخب کر کے چھپنے کو دے دیں۔ لیکن خیال رہے یہ صرف دعوت نامہ ہے اس پر غیر ضروری خرچہ  کرنے سے گریز کریں۔
۔ شادی کے دن کا مینو فائنل کرلیں اور اچھی کیٹررنگ سروس کا بھی انتخاب کر لیں۔
۔ اپنے مہمانوں کی فہرست کو فائنل کر لیں۔
۔ غیر ضروری مہمانوں اور غیرضروری اخراجات سے گریز کریں۔
۔اپنے جہیز کے کپڑے فائنل کر دیں۔اور ان کی پیکنگ شروع کر دیں۔
۔ جہیز کے سامان کی فہرست بنالیں،اور اس کی پیکنگ کرنا شروع کر دیں۔
۔ جہیز میں غیر ضروری سامان سے گریز کریں اس سے خرچا بھی ڈبل ہو جاتا ہے اور چیز بھی برباد ہوتی ہے۔
۔ اگر دولہا والوں کو اعتراض نہ ہو تو یہ زیادہ بہتر ہے کہ جہیز میں چیزوںکی بھر مار کے بجائے لڑکی کے اکائونٹ میں کیش جمع کر وا دیا جائے تاکہ وہ وقت ِضرورت اس کے کام آ سکے۔یا جس چیز کی ضرورت وہ محسوس کرے اسے اپنی مر ضی سے لے سکے۔

یہ بھی پڑھیں ۔ شادی سے پہلے اُبٹن لگانا کیوں ضروری؟

٭شادی سے ۱۵دن پہلے:۔

۔ شادی سے۱۵ دن پہلے دلہن کو گھر بیٹھ جانا چاہیے تاکہ وہ اپنی شاد ی پر فریش ہو ۔
۔ باہر کے غیر ضروری چکر خاص طور پربازاروں کی دوڑ اب ختم کریں۔اس کے ساتھ دھوپ میں نکلنے سے بھی گریز کریں۔ ورنہ شادی والے دن تھکاوٹ کے ساتھ ساتھ رنگت بھی جھلسی ہوئی ہو گی۔ میک اپ سے وقتی طور پر اس کو چھپایا جا سکتا ہے لیکن مستقل نہیں۔ اس لیے بہتر ہے کہ ۱۵ دن پہلے باہر کی دوڑ ختم کردیں۔
۔ پانی کا استعمال زیادہ کریں تاکہ جلد ترو تازہ رہے۔پھلوں اور جوسز کو زیادہ اہمیت دیں خاص کر موسم کے پھل، تازہ سبزی اور سلاد کھائیں، مرغن غذائوں سے پر ہیز کریں اس سے چہرے پر دانے ہو سکتے ہیں۔
۔ نیند پوری لیں ورنہ آنکھوں کے نیچے حلقے بن جائیںگے۔
۔ اپنے شادی کے جوڑے کی فٹنگ وغیرہ چیک کرلیں تاکہ عین وقت پر بد مزگی نہ ہو۔
۔ سینڈل وغیرہ بھی دیکھ لیں کہ بے آرام یا تکلیف دہ نہ ہو۔
۔ ہال یا بینکوئیٹ کا جائزہ لے لیں کہ اس کی کیا صورتحال ہے۔
۔ڈریسنگ روم کا بھی جائزہ لے لیں۔ کیونکہ دلہن کو وہاں اچھا خاصا ٹائم بیٹھنا ہوتا ہے۔
۔ اگر شادی کے دن کیک کا انتظام کیا ہے تو اس کی تھیم بھی فائنل کر لیں ۔
۔ شادی والے دن سے پہلے مایوں یا مہندی میں میک اپ کم سے کم کریں تاکہ شادی کے دن چہرے پر نیا پن لگے۔اور دلہناپے کا روپ چڑھے۔
۔ شادی والے دن ملنے والے تحائف کی حفا ظت کے لئے خاندان کے کسی بڑے اور ذمہ دار شخص کو منتخب کریں جو ملنے والے تحائف کا دھیان رکھ سکے اور حفاظت کر سکے۔
۔شادی کے دن سے پہلے پے در پے تقریبات نہ رکھیں ورنہ تھکن ہو جائے گی۔ خاص کر شادی سے ایک دن پہلے کوئی تقریب نہ رکھیں۔
۔ شادی سے پہلے گھر میں رکھے جانے والے رت جگے تھکاوٹ میں بھی مبتلا کرتے ہیں اور نیند کی کمی سے حلقے بھی پیدا کرتے ہیں اس لئے بہتر ہے کہ ایسے پروگراموں سے گریز کریں۔
یاد رکھیں آپ کی شادی آپ کا مسئلہ ہے اسے دسروں کے اچھا اور برا لگنے کے چکر میںبرباد نہ کریں جس چیز میں خود آرام اور آسانی محسوس کریں وہ کریں دوسرے کیا کہیں گے اس کے لئے نہ غیر ضروری اخراجات بڑھائیں اور نہ تقریبات کو طول دیں۔کہنے والے کسی طرح مطمئن نہیں ہوتے ،اس لئے ان کی فکر چھوڑیں ۔اپنا بجٹ اور اپنی جیب اور گھر والوں کا خیال کرتے ہوئے جو مناسب ہو وہ کریں۔