شیمپو اور کنڈیشنز کیوں تبدیل کرتے رہنا چاہیے؟

0

بالوں کی افزائش اور اچھی نشوونما کے لیے اچھے اور معیاری شیمپو کا استعمال کیا جاتا ہے، خاص طور پر ایسی خواتین جو اپنے بالوں کے حوالے سے بہت زیادہ حساس ہوتی ہیں وہ ہر اچھا شیمپو استعمال کرنا چاہتی ہیں۔ بالوں کی خوبصورتی خواتین کو محفل میں منفرد اور لوگوں کی توجہ کا مرکز بناتی ہے، یہی وجہ ہے کہ ایسی خواتین جن کے بال گھنے، لمبے اور سیاہ ہوتے ہیں وہ زیادہ جاذب نظر ہوتی ہیں۔

بالوں کی دیکھ بھال اور انھیں حسین بنانے کے لیے زمانہ قدیم گھریلو ٹوٹکوں اور نسخوں کا سہارا لیا جاتا رہا ہے، لیکن جیسے جیسے وقت تبدیل ہوا جدید سائنس نے بالوں کی دیکھ بھال کے حوالے سے ایسی ریسرچ کی جس سے گھریلو نسخوں کو پیچھے چھوڑ دیا۔

صابن، شیمپو اور کنڈیشنر بالوں کے بہترین محافظ ٹھہرے، یہی وجہ ہے کہ آج دنیا بھر میں شیمپواور کنڈیشنر (shampoo and conditioner) کے بغیر اچھے اور صاف ستھرے بالوں کا تصور بھی نہیں ہے۔

شیمپو کا استعمال

٭ جس طرح انسانی جلد پر موسم، پانی اور ماحول کا اثر ہوتا ہے، بالوں پر بھی یہ عوامل اپنا اثر رکھتے ہیں، ہر ایک کے بال دوسرے کے بالوں سے مختلف ہوتے ہیں۔

٭ یہی وجہ ہے کہ دنیا بھر میں استعمال تیار کیے جانے والے شیمپو بالوں کی مختلف اقسام کے مطابق ہی تیار کیے جاتے ہیں۔

٭ شیمپو بالوں کی جلد سے میل کچیل کو نکال باہر کرتے ہیں اور بالوں کو حسین اور خوبصورت بناتے ہیں۔

کنڈیشنر کا استعمال

٭ کنڈیشنر بالوں کو مزید خوبصورت اور چمک دار بناتا ہے۔

٭ یہی وجہ ہے کہ خواتین شیمپو کے بعد کنڈیشنر کا استعمال کرتی ہیں جس سے ان کے بال کھلے کھلے اور سلجھے ہوئے چمکدار نظر آتے ہیں۔

٭ کچھ شیمپو ایسے بھی ہوتے ہیں جس میں پہلے سے ہی کنڈیشنر شامل ہوتا ہے جس کے لیے الگ سے کنڈیشنر کے خریدنے کی ضرورت نہیں ہوتی۔

شیمپو اور کنڈیشنر کی تبدیلی کیوں ضروری ہے؟

٭ اس کی ایک خاص وجہ تو یہ ہے کہ جیسے جیسے میڈیکل سائنس ترقی کرتی جا رہی ہے، بالوں اور بالوں کی جلد کے حوالے سے بہت سی چیزیں سامنے آتی جارہی ہیں۔

٭ شیمپو اور کنڈیشنر کی تیاری میں ان باتوں کا خاص خیال رکھا جاتا ہے تاکہ بالوں کی افزائش کے لیے جو اجزا ضروری ہوں انھیں شیمپو اور کنڈیشنر میں شامل کر کے بالوں تک پہنچایا جاسکے۔

٭ کچھ خواتین کو کچھ شیمپو اور کنڈیشنر سوٹ نہیں کرتے ، جس کی وجہ سے ان کے بالوں کو نقصان ہوتا ہے، یا تو بال بار بار ٹوٹتے ہیں، یا پھر روکھے اور بے جان ہوجاتے ہیں، اس کے لیے انھیں سب سے پہلے شیمپواور کنڈیشنر تبدیل کرنے کی ضرورت ہے۔

٭ موسم کی تبدیلی کے اعتبار سے بھی شیمپو اور کنڈیشنر کی تبدیلی کی ضرورت ہوتی ہے، جس طرح موسم سرما میں خشک ہوائیں بالوں کو الجھا کے رکھ دیتی ہیں ایسے میں ایسے شیمپواور کنڈیشنر کی ضرورت ہے جو ان کا مقابلہ کر سکیں۔

٭ اسی طرح موسم گرما میں بالوں میں اکثر تیل ، چکنائی اور پسینہ ظاہر ہونے لگتا ہے، ایسے میں ان شیمپو اور کنڈیشنر کا استعمال ضروری ہے جو چکنے اور آئلی بالوں کو خشکی فراہم کرسکے۔