۳ طرح کے لپ اسکرب گرمیوں میں استعمال کریں

0

جس طرح سرد اور خشک موسم میں جلد کے مسائل جنم لیتے ہیں، اسی طرح موسم گرما بھی جلد کے لیے کچھ کم نہیں ہوتا۔ جلد اور موسم کا مزاج اکثر ایک دوسرے کے مخالف ہوتا ہے جس کے نتیجے میں جلد اور خاص طور پر چہرے اور ہونٹوں کی جلد ایک معما بن کر رہ جاتی ہے۔

لپ اسکرب:(lip scrubs)

لپ اسکرب جلد کے مردہ خلیوں کو ختم کرتا ہے اور ہونٹوں کو نئی تازگی دیتا ہے، یہی وجہ ہے کہ خواتین زیادہ تر لپ اسکرب استعمال کرتی ہیں تاکہ ان کے ہونٹ نرم و ملائم اور تروتازہ دکھائی دیں، خاص طور پر موسم سرما میں اس کی بہت ضرورت ہوتی ہے اور موسم گرما میں بھی لپ اسکرب استعمال کیا جاتا ہے تاکہ ہونٹ پھولوں کے طرح کھل اٹھیں۔

موسم گرما میں استعمال کیے جانے والے لپ اسکرب:
(3 types of lip scrub in summer)

یوں تو لپ اسکرب کی بہت سی اقسام ہیں جو ہونٹوں کو تروتازہ رکھنے کے لیے اہمیت کے حامل ہیں، لیکن کچھ لپ اسکرب ایسے ہیں جو گرمی کے موسم میں جب سورج کی تپش عروج پر ہوتی ہے اور اس کی مضر شعاعیں جلد کو متاثر کرتی ہیں ، ایسے میں جلد کو پہنچنے والے نقصان کو پورا کرنے کے لیے کچھ لپ اسکرب حیرت انگیز طور پر ہونٹوں کی حفاظت کرتے ہیں، جنھیں بآاسانی گھر پر بھی تیار کیا جاسکتا ہے۔

چینی کا لپ اسکرب: (sugar lip scrub)

اسکرب کے لیے چینی سے اچھا کچھ نہیں، جلد کی نزاکت اور حساسیت کو مدنظر رکھتے ہوئے چینی کا لپ اسکرب گھر پر بھی تیار کیا جاسکتا ہے جس کے لیے چینی، شہد اور پیٹرولیم درکار ہے۔ ان تینوں اجزا کو بادام یا زیتون کے تیل میں ملا کر اچھی طرح مکس کرلیں، پھر تیار کیے گئے اسکرب کو ہونٹوں پر کچھ دیر کے لیے لگا چھوڑ دیں، پھر اس کو ہاتھ کی انگلی سے ہلکے ہلکے رگڑتے ہوئے ہونٹوں سے صاف کردیں۔ اس سے ہونٹوں میں تازگی دکھائی دے گی۔

دہی کا لپ اسکرب: (yogurt lip scrub)

دہی سے ایک زبردست اسکرب تیار کیا جا سکتا ہے . دہی میں موجود اسکربنگ خصوصیات کی وجہ سے ہونٹوں پر اس کا مساج کرنے سے اسکے مردہ خلیات صاف ہوجاتے ہیں. دہی میں چاول کا پاؤڈر ملا کر گاڑھا سا پیسٹ بنالیں. اس سے چہرے پر گولائی میں مساج کریں . تھوڑی دیر بعد ٹھنڈے پانی سے دھو لیں . چاول کی جگہ جو کا آٹا بھی شامل کیا جا سکتا ہے ۔

دودھ اور شہد کا لپ اسکرب: (honey and milk lip scrub)

دودھ کو ایک اسکرب کے طور پر استعمال کیا جاسکتا ہے۔ اس میں قدرتی طور پر ایلفا ہائیڈروآکسل ایسڈ کی بڑی مقدار موجود ہوتی ہے اور یہ مرکب مہنگی ترین کاسمیٹکس مصنوعات میں بھی شامل کیا جاتا ہے۔ اے ایچ اے جلد سے مردہ خلیات کو نکال باہر کرتا ہے، جلد کی سطح کو نرم اور روشن بناتا ہے۔ دودھ اور شہد کو ملاکر ایک قدرتی اسکرب بنایا جاسکتا ہے۔ اسے ہونٹوں پر لگائیں اور 15 منٹ بعد نیم گرم پانی سے دھولیں۔ گرمیوں میں آپ کے ہونٹ گلاب کی طرح تروتازہ ہوجائیں گے۔